aur kya daikhta hon ke jaisay kapray

حضرت معرور سے روایت ہے کہ میں حضرت ابو ذر رضی اللہ عنہ سے ربذہ میں ملا ہوں ، اور کیا دیکھتا ہوں کہ جیسے کپڑے انہوں نے پہن رکھے ہیں ویسے ہی اپنے غلام کو بھی پہنائے ہوئے ہیں،میں نے اس کا سبب پوچھا تو اُنہوں نے بتایا کہ میں نے ایک مرتبہ اپنے ایک غلام کو ماں کا طعنہ دیا تو نبی ﷺ نےمجھ سے فرمایا تو نے اس کو ماں کا طعنہ دیا ہے؟ تیرے اندر ابھی تک جاہلیت کے اثرات باقی ہیں،یہ غلام تمھارے بھائی ہیں ، اللہ نے ان کو تمھارے ماتحت (کسی مصلحت کی خاطر )کیا ہے، لہذا اپنے ان بھائیوں کو وہی کھلاؤ جو خود کھاؤ اور وہ پہناؤ جو خود پہنو، اور طاقت سے زیادہ ان پر بوجھ مت ڈالو، اگر ڈالو تو ان کا ہاتھ بٹاؤ۔